افغانستان کے مشرقی صوبے پکتیکا میں طالبان باغیوں کے ساتھ جھڑپوں میں ایک ضلعی پولیس سربراہ ہلاک اور 4 پولیس اہلکار زخمی ہو گئے ہیں۔ اس بات کی تصدیق صوبائی پولیس کے ترجمان نے جمعرات کے روز کی۔ترجمان شاہ محمود آرائیں نے شِنہوا کو بتایا کہ بدھ کے روز رات گئے ضلع باک خیل کے گردونواح کے علاقوں میں طالبان باغیوں کے ساتھ جھڑپوں میں ضلع باک خیل کے پولیس سربراہ عبداللہ جان شہید اور 4 پولیس اہلکار زخمی ہو گئے ہیں۔ جھڑپیں اس وقت شروع ہوئیں جب طالبان نے سیکورٹی چوکیوں پر دھاوا بولتے ہوئے پولیس اہلکاروں پر حملہ کر دیا۔
ترجمان نے ہلاکتوں کی اصل تعداد بارے کوئی تفصیلات نہ بتاتے ہوئے کہا کہ ہلاکتوں کے بعد طالبان عسکریت پسندوں کو ضلع سے پسپا کر دیا گیا ہے۔ملک پر حکمرانی کرنے والے طالبان عسکریت پسند جن کا تختہ 2001 کے آخر میں الٹا گیا مسلح کارروائیوں میں سرکاری فوجیوں اور عام شہریوں کو ہلاک کرنے کے حوالے سے جانے جاتے ہیں۔وہ اکثر ضلعی دفاتر ، فوجی کیمپوں ، حکومتی تنصیبات اور سیکورٹی چوکیوں پر حملے کرتے ہیں جبکہ افغان فوجی دیہی علاقوں میں عسکریت پسندوں کے ٹھکانوں پر فضائی حملوں کے ساتھ جواب دیتے ہیں۔

Post a Comment

جدید تر اس سے پرانی