جسٹس فائز عیسی کی لندن میں جائیداد سے متعلق ریفرنس کی سماعت کے دوران جسٹس فائز عیسی کی اہلیہ نے عدالت کو ویڈیو لنک کے ذریعے ںیان ریکارڈ کروایا۔
روزنامہ پاکستان کے مطابق جو بیان فائز عیسی کی اہلیہ نے ریکارڈ کروایا ہے اس میں انہوں نے بتایا" کہ میرے والد قریب المرگ ہیں،نہیں معلوم تھا کہ اکیس سال بعد لندن میں جائیداد خریدوں گی، شادی کے اکیس سال بعد جائیداد خریدی، میرا کمپیوٹرائزڈ شںاختی کارڈ دو ہزار تین میں بنا، میری والدہ اسپین کی شہری تھیں۔
قاضی فائز عیسی کی اہلیہ کے بیان نیں ایک بھی بار نہیں بتایا گیا کہ لندن میں جائیداد خریدنے کے لئے ان کے پاس رقم کہاں سے آئی۔
واضح رہے کہ قاضی فائز عیسیٰ کا دعویٰ  ہے انکی اہلیہ انکے زیر کفالت نہیں بلکہ خودمختار ہیں۔جبکہ ایف بی آر کے مطابق قاضی فائز عیسی کی اہلیہ کئی سال سے ٹیکس نہیں دے رہیں تھیں اور گوشواروں میں بھی کوئی جائیداد نہیں شو کروائی۔
مزید یہ کہ فائز عیسی کی اہلیہ ایف آر کے سامنے پیش ہونے سے انکار کرچکی ہیں

Post a Comment

جدید تر اس سے پرانی